Advisory Detail

Title ڈائریکٹر جنرل زراعت کا پیغام یکم اپریل تا 15اپریل 2013ء
Date 2013-04-01 - 2013-04-15
Advisory Content

گندم کے کاشتکاروں کو اپنی فصل سے رکھے ہوئے بیج کی سنبھال بارے ہدایات دی جائیں:
* بیج کے لیے منتخب شدہ کھیت میں برداشت کے وقت فصل مکمل طور پر پکی ہوئی اور خشک ہونی چاہیے۔ فصل کمزور اور گری ہوئی حالت میں نہ ہو۔ جڑی بوٹیوں ، بیماریوں نیز دوسری اقسام کے بیج سے بھی پاک ہو۔اگر جڑی بوٹیوں ،بیماری زدہ گندم اور دوسری اقسام کے پودے کھیت میں موجود ہوں تو فصل کی برداشت سے قبل نکال لیں۔یہ یاد رکھیں اس عمل سے گندم کی پیداوارپودے ٹوٹنے سے متاثر نہ ہو۔
* فصل کی برداشت بڑی احتیاط سے کریں تاکہ دوسری اقسام کے بیج مطلوبہ اقسام میں شامل نہ ہوں اور کٹائی کے بعد بھریوں کو قسم وار الگ الگ رکھیں اور اسی طرح الگ الگ گہائی کریں۔
* تھریشر/ کمبائن ہارویسٹر کو چلانے سے پہلے اچھی طرح صاف کر لیں۔ قسم وار گہائی کے لیے ہربار ایک سے دوبوری پہلے نکلنے والے دانے بطوربیج نہ لیں یہ یاد رکھیں کہ گندم کا بیج جڑی بوٹیوں کے بیج اور تمام آلائشوں سے پاک ہو۔
* بیج کو ذخیرہ کرنے کے لیے نئی پٹ سن والی بوریاں استعمال کریں اگر یہ ممکن نہ ہوتو پرانی بوریوں خصوصاً کونوں کو اچھی طرح صاف کر کے زہریلی دھونی دیں ۔ دانے میں نمی 12-10فیصد سے زیادہ نہ ہو اور سٹور کے درجہ حرارت کو 21درجہ سینٹی گریڈ سے اوپر نہ جانے دیں۔اس مقصد کے لیے روشن اور ہوادار گودام استعمال کریں۔
* بیج کو ذخیر ہ کرنے سے قبل سٹور کو اچھی طرح صاف کریں ۔ ذخیرہ شدہ ہر بوری پر قسم کا نام لکھاجائے اور ایک پرچی پر قسم کا نام لکھ کر اس بوری میں ڈال دیں۔ اس کے بعد سٹور کوبحساب 35-30زہریلی گولیوں سے فی ہزار مکعب فٹ دھونی دیں اور 72گھنٹوں کے بعد سٹور کو کھلا چھوڑ دیں۔
* محکمہ زراعت پنجاب کی طرف سے کپاس کے کاشتکاروں کو بی ٹی اقسام کی پیداواری ٹیکنالوجی سے آگاہی کے لیے تربیتی پروگراموں میں پرنٹ والیکٹرانک میڈیا کو بھی استعمال کیا جائے ۔ یہ بات حوصلہ افزا ہے کہ صوبہ پنجاب میں کپاس کے کاشتکاروں کی اکثریت جدید سفارشات کے حصول کے لیے کوشاں رہتی ہے لیکن ایسے ترقی پسند کاشتکاروں کو اوردوسر ے کسانوں کو بھی جدید پیداواری ٹیکنالوجی سے روشناس کروایا جائے کیونکہ بی ٹی اقسام کا وقت کاشت، کھادوں اور پانی کی ضروریات روایتی اقسام سے مختلف ہیں اس لیے بی ٹی اقسام کا انتخاب علاقے کی موزونیت ، مقامی معلومات اور پچھلے سالوں کے تجربات کی روشنی میں کریں تاکہ کپاس کی فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ کو یقینی بنایا جا سکے۔
* محکمہ خوراک کے زیر انتظام گندم کی خریداری مہم ماہ اپریل سے شروع ہو رہی ہے ۔ گندم کی شفاف خریداری کے لیے مانیٹرنگ کاسخت نظام بھی وضع کیا جا رہا تواس سلسلہ میں گزارش ہے کہ کسی قسم کی باقاعدگیوں سے بچتے ہوئے کاشتکاروں کی ہر ممکن رہنمائی کریں۔
اللہ تبارک وتعالیٰ ملک کی ترقی و خوشحالی میں ہم سب کا حامی وناصر ہو۔(آمین)